نائیجیریا میں شیعہ مسلمانوں کا قتل عام وہابیوں کے کہنے پر کیا گیا

نائیجیریا میں شیعہ مسلمانوں کا قتل عام وہابیوں کے کہنے پر کیا گیا

نائیجیریا کی اسلامی تحریک کے سینیئر رہنما نے کہا ہے کہ سید الشہدا حضرت امام حسین علیہ السلام کے چہلم کے روز نائیجیریا کے شیعہ مسلمانوں کا قتل عام وہابیوں کے کہنے پر کیا گیا تھا۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ نائیجیریا کی اسلامی تحریک کے رہنما ابراہیم سلیمان نے کہا کہ نائیجیریا کی حکومت میں وہابیوں کی بڑی تعداد موجود ہے جو اہل بیت اطہار علیھم السلام سے عداوت و دشمنی رکھتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جب سے محمدو بوہاری نائیجیریا کے صدر بنے ہیں اس ملک کے وہابیوں کی عداوت و دشمنی میں شدت آگئی ہے۔

نائیجیریا کی اسلامی تحریک کے رہنما ابراہیم سلیمان نے اربعین کے دن عزاداروں پر کئی گئی فائرنگ کے بارے میں کہا کہ وہابی عناصر شیعہ مسلمانوں کو کچلنے کے لئے ہر موقع سے فائدہ اٹھاتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ان تمام حالات کے باوجود نائیجیریا کے شیعہ مسلمانوں نے ثابت کیا ہے کہ جتنے بھی مظالم ان پر ڈھائے جائیں اور ان کے قائد آیت اللہ شیخ زکزکی کو جتنے بھی دن قید رکھا جائے وہ اپنی مذہبی سرگرمیوں اور خاص طور پر امام حسین علیہ السلام کی عزاداری کو ترک نہیں کریں گے۔ اسلامی تحریک کے رہنما نے اس بات کا ذکرکرتے ہوئے کہ نائیجیریا کی بیشتر آبادی مسلمانوں کی ہے کہا کہ حکومت اور وہابیوں کی خواہش کے باوجود نائیجیریا میں مسلمانوں اور عیسائیوں کے تعلقات روز بروز بہتر ہورہے ہیں اور عیسائی برادری بھی مسلمانوں کےساتھ مل کر امام حسین علیہ السلام کی عزاداری کرتی ہے۔

واضح رہے کہ اس سال اربعین کے دن نائیجیریا کے دارالحکومت ابوجا میں فوج نے عزاداروں پر فائرنگ کرکے کم سے کم انتالیس عزاداروں کو شہید اور ایک سو بیس سے زائد کو زخمی کردیا تھا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

haj 2018
We are All Zakzaky
telegram